عید الاضحیٰ مبارک

اسلام میں عید الاضحی کی اہمیت

دین اسلام میں مسلمان رمضان المبارک کے خاتمے کے بعد عیدالفطر مناتے ہیں اور عید الاضحی کو بڈھی عید کہا جاتا ہے، جو اللہ تعالیٰ کی اطاعت میں اپنے بیٹے حضرت اسماعیل علیہ السلام کو قربان کرنے کے لیے حضرت ابراہیم علیہ السلام کی رضا مندی کی نشان زدگی کرتا ہے۔ عید کا مطلب ہے جشن منانا اور عیدالاضحی سے مراد قربانی ہے چنانچہ عید الاضحی کو بھی قربانی کا تہوار کہا جاتا ہے جس میں مسلمان ایک ایسے گھریلو جانور کی قربانی کرتے ہیں جو عید الاضحی کے تین دنوں میں سے کسی ایک دن میں گائے، بھیڑ، بکری، یا اونٹ کو اللہ تعالیٰ کی رضا کے لئے قربانی دیتے ہیں۔ مسلمان ۱۰ ذی حج کو عید الاضحی مناتے ہیں۔

پوری دنیا کے مسلمان جو جسمانی اور مالی طور پر مستحکم ہیں وہ ذی حج کے مقدس مہینے میں مقدس فریضہ حج ادا کرنے کے لئے مکہ کا رخ کرتے ہیں۔ ہم سب کو معلوم ہونا چاہئے کہ حج اسلام کا پانچواں ستون ہے اگر وہ مالی طور پر مستحکم ہے تو زندگی میں ایک بار ہر مسلمان پر فرض ہے ۔ حج کرنے کے بعد مسلمان عید الاضحی مناتے ہیں اور قربانی کے وقت اللہ کا نام لے کر جانور ذبح کرتے ہیں، ہمیں یاد دلایا جاتا ہے کہ زندگی مقدس ہے۔ عیدالاضحی کی قربانی سے گوشت زیادہ تر دوسروں میں تقسیم کیا جاتا ہے۔ ایک تہائی فوری خاندان اور رشتہ داروں میں تقسیم کیا جاتا ہے، ایک تہائی دور دوستوں کو دیا جاتا ہے، اور ایک تہائی غریب اور محتاج کو عطیہ دیا جاتا ہے۔ دینے کا یہ عمل اللہ کے احکامات پر عمل کرنے کے لیے ایسی چیزیں ترک کرنے پر ہماری آمادگی کی علامت ہے جو ہمارے لئے فائدہ مند ہیں یا ہمارے دلوں کے قریب ہیں۔

قربانی دینے اور پھر تقسیم کرنے کا عمل ہماری اپنی کچھ نعمتوں کو ترک کرنے، دوستی کے تعلقات کو مضبوط بنانے اور ضرورت مندوں کی مدد کرنے کے لئے ہماری آمادگی کی علامت بھی ہے۔ ہم تسلیم کرتے ہیں کہ تمام نعمتیں اللہ کی طرف سے آتی ہیں، اور ہمیں اپنے دلوں کو کھولنا چاہئے اور اللہ تعالی کی رضا کے لئے دوسروں کے ساتھ اشتراک کرنا چاہئے. بڑی سے بڑی عید یا عیدالاضحی بھی حج کے اختتام کی نشان دہی کرتی ہے جو پانچ روزہ مذہبی سفر ہے جو مسلمان مکہ مکرمہ میں حج ادا کرنے جاتے ہے۔

عید الاضحی کے دن مسلمان اللہ تعالی سے دعا کرتے ہیں اور ان کے احسانات کو یاد رکھنے کے لئے ان کے نام کی تسبیح کرتے ہیں۔ اس موقع پر مسلمان ضرورت مندوں کی طرف مدد کا ہاتھ بڑھا کر اور ان میں گوشت بھی تقسیم کر کے یاد کرتے ہیں۔ اللہ تعالی ہمیں زندگی میں ایک بار حج جیسی عبادت بجا لانے اور اللہ تعالی کے راہ میں جانوروں کو ذبح کرنے کا موقع فراہم کریں! آمین یارب العالمین

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *